Jul 23, 2011

ملا آج وہ مجھ کو چنچل چھبیلا - نظیر اکبر آبادی

ملا آج وہ مجھ کو چنچل چھبیلا
ہوا رنگ سُن کر رقیبوں کا نیلا

لیا جس نے مجھ سے عداوت کا پنجہ
سنلقی علیہم عذاباً ثقیلا

نکل اس کی زلفوں کے کوچہ سے اے دل
تُو پڑھنا، قم اللّیلَ الّا قلیلا

Nazeer Akbarabadi, نظیر اکبرآبادی, urdu poetry, urdu ghazal, ilm-e-arooz, taqtee,
نظیر اکبرآبدی Nazeer Akbarabadi
کہستاں میں ماروں اگر آہ کا دم
فکانت جبالاً کثیباً مہیلا

نظیر اس کے فضل و کرم پر نظر رکھ
فقُل، حسبی اللہ نعم الوکیلا

(نظیر اکبر آبادی)

مآخذ: 'نقوش، غزل نمبر'، لاہور، 1985ء

-----

بحر - بحر متقارب مثمن سالم

افاعیل - فَعُولن فَعُولن فَعُولن فَعُولن

اشاری نظام - 221 221 221 221

تقطیع -

ملا آج وہ مجھ کو چنچل چھبیلا
ہوا رنگ سُن کر رقیبوں کا نیلا

ملا آ - فعولن - 221
ج وہ مُج - فعولن - 221
کُ چنچل - فعولن - 221
چھبیلا - فعولن - 221

ہوا رن - فعولن - 221
گ سن کر - فعولن - 221
رقیبو - فعولن - 221
کَ نیلا - فعولن - 221

متعلقہ تحاریر : اردو شاعری, اردو غزل, بحر متقارب, بحر متقارب مثمن سالم, تقطیع, کلاسیکی اردو شاعری, نظیر اکبر آبادی

8 comments:

  1. واہ کیا بات ہے۔ پڑھ کے مزا آگیا
    جسارت کر رہا ہوں اصلاح فرمائیں
    لیا جس
    ن مج سے
    عداوت
    ک پن جہ
    س نل قی
    ع لے ہم
    ع ذا بن
    ث قی لا
    نکل اس
    ک زل فو
    ک کو چہ
    س اے دل
    ت پڑ نا
    ق مل لے
    ل ال لا
    قلی لا
    کہس تا
    م ما رو
    اگر آ
    ہ کا دم
    ف کا نت
    ج با لن
    ک ثی بن
    م ہی لا
    نظی رس
    ک فض لو
    کرم پر
    نظر رک
    ف قل حس
    ب یل لا
    ہ نع مل
    و کی لا
    سعید

    ReplyDelete
  2. سعدی کے اس شعر کی بحر کا نام بتا دیجئے
    نگہ دار ما را ز راہ خطا
    خطا در گذارو صوابم نما
    میرے ناقص حساب سے متقارب سالم کی ہی کوئی مزاحف شکل ہے کہ صرف آخری رکن بدل رہا ہے اور فعولن کے بجائے فعل آ رہا ہے
    سعید

    ReplyDelete
  3. سعید صاحب آپ نے درست تقطیع کی ہے، بہت خوب۔

    ReplyDelete
  4. اللہ آپ کو خوب خوب جزائے خیر دے
    سعید

    ReplyDelete
  5. سعدی کے مذکورہ شعر کی بحر متقارب مثمن محذوف ہے اور وزن

    فعولن فعولن فعولن فَعِل ہے

    اس وزن کے ساتھ یعنی محذوف کے ساتھ مقصور وزن بھی آ سکتا ہے یعنی

    فعولن فعولن فعولن فعول

    یہ دونوں متقارب سالم کی مزاحف اشکال ہیں لیکن متقارب سالم کے ساتھ یہ دونوں اوزان اکھٹے نہیں ہو سکتے البتہ جیسا کہ لکھا دونوں مزاحف اوزان آپس میں جمع ہو سکتے ہیں۔

    ReplyDelete
  6. نوشابہ شوکتMarch 7, 2012 at 7:43 AM

    وارث صاحب بہت عمدہ،بہت قابلِ قدر کام ہے جو آپ انجام دے رہے ہیں۔۔خوش رہیں

    ReplyDelete